Breaking News
crossorigin="anonymous">

یوکرین کی خاتون صحافی پریس کانفرنس میں برطانوی وزیراعظم کے سامنے رو پڑیں

وارسا(این این آئی) یوکرین سے تعلق رکھنے والی خاتون رپورٹر برطانوی وزیراعظم بورس جونسن سے سوال کرنے کے دوران رو پڑیں۔یوکرائنی صحافی ڈاریا کالینیوک نے پولینڈ میں ایک پریس کانفرنس کے دوران

برطانوی وزیراعظم بورس جونسن کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مطالبہ کیا کہ وہ روسی جیٹ طیاروں کو شہریوں کی ہلاکتوں کو روکنے کے لیے نو فلائی زون نافذ کریں۔ڈاریا کالینیوک نے سوال کیا کہ تقریباً 40 میل لمبا ایک

فوجی قافلہ یوکرین کے دارالحکومت کے شمال میں ہے اور خدشہ ہے کہ شہر کو راکٹوں کی بوچھاڑ کا سامنا کرنا پڑے گا جو تباہ کن شہری ہلاکتوں کا باعث بن سکتے ہیں۔انہوں نے بورس جونسن سے پوچھا کہ آپ ’’آپ پولینڈ آ

رہے ہیں، لیکن آپ کیف کیوں نہیں آرہے، کیونکہ تم ڈرتے ہو اور نیٹو دفاع پر آمادہ نہیں ہے‘‘، نیٹو تیسری عالمی جنگ سے خوفزدہ ہے جو پہلے ہی شروع ہوچکی ہے۔دوسری جانب میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا جارہا ہے کہ

برطانیہ اور نیٹو اتحادی ‘آرٹیکل 5 کے تصادم کے خطرے کی وجہ سے نو فلائی زون کو نافذ کرنے سے انکار کر رہے ہیں، جو 30 ممالک کے اتحاد نیٹو کو جوہری ہتھیاروں سے لیس روس کے ساتھ جنگ پر مجبور کر سکتا ہے۔

Check Also

معروف شیف براک برین ٹیومر کی بیماری میں مبتلا، ہسپتال سے تصاویر شئیر کر دی

ترکی کے معروف شیف اور وی لاگر براک اوزدامیر اپنے منفرد انداز سے کھانا پکانے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *