جسے کوئی خوبصورت عورت برے کام کی دعوت دے تو۔۔۔؟؟ حضرت محمد ﷺ

جسے کوئی خوبصورت عورت برے کام کی دعوت دے تو۔۔۔؟؟ حضرت محمد ﷺ

رسول اللہ ﷺ نےارشاد فرمایا: فجر کی دو سنتیں دنیا اور جو کچھ دنیا میں ہے اس سےبہتر ہے۔ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جس نے مسجد سے اذیت دینے والی چیز (جیسے مٹی ، کنکر)نکالی اللہ پاک اس کے لیے جنت میں ایک گھر بنائے گا۔ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: قیامت کے دن تم اپنے اور اپنے آباء کے ناموں سے پکارے جاؤ گے۔ لہٰذا اپنے

اچھے نام رکھا کرو۔ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: اللہ پاک اسے اپنے عرش کے سائے میں جگہ عطافرمائے گا جسے کوئی حسب و نسب والی خوبصورت عورت (برے کام کی ) دعوت دے تو وہ کہے : میں اللہ پاک سے ڈرتا ہوجوتمام جہانوں کارب ہے۔ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جب تم کسی شخص کو مسجد میں آتا جاتا دیکھو تو

اس کے ایمان کی گواہی دو۔ حضرت ابو موسی ٰ اشعری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جو بھی عورت خوشبو لگا کر لوگوں کے پاس سے گزرتی ہے۔ تاکہ وہ اس کی خوشبو سونگھیں ( اوراس کی طرف متوجہ ہوں ) تو وہ بد کار اور زانیہ ہے۔ رسول اکر م ﷺ نے ارشاد فرمایا: میں نے جنت میں جھانکا تواس میں

غریبوں کو زیادہ دیکھا اور جب دوزخ میں دیکھا تو عورتوں کی اکثریت تھی۔ رسول اکر م ﷺ نے فرمایا: جو شخص خاموش رہا اس نے نجات پائی۔رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: جوشخص غصے کوپی جائے حالانکہ وہ جاری کرنے پرقادر ہے اللہ تعالیٰ اسے لوگوں کےسامنے بلائے گا اور اختیا ر دے گا کہ جس حور کو چاہے پسند کرے۔ رسول اکر م ﷺ نے

فرمایا: انسان کو بوڑھا ہوتا ہے اور اس کی دوچیزیں جوان ہوتی ہیں اول: مال اور دوم: طویل زندگی کا حرص۔ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: انسان کی تخلیق اس صورت میں کی گئی کہ اس کے دونوں جانب ننانوے موتیں ہیں اگر ان سے بچ نکلے تو بڑھاپے میں گرفتار ہوجاتا ہے۔ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: میت کے ساتھ تین چیزیں جاتی ہیں۔ ان میں سے دو واپس آجاتی ہیں۔ اور ایک وہیں رہ جاتی ہے ۔ اس کے پیچھے اس کا مال ، اولاد اور عمل جاتے ہیں۔ اولاد اور مال واپس آجاتے ہیں اور عمل باقی رہتاہے۔