حضور اکرم ﷺ کونسی دعا پڑھتے اور مریض تندرست ہوجاتا تھا؟ایمان افروز تحریر

حضور اکرم ﷺ کونسی دعا پڑھتے اور مریض تندرست ہوجاتا تھا؟ایمان افروز تحریر - Sabee Kazmi

لعاب محمد ﷺ میں شفائے کاملہ تھی .اللہ کے محبوب نبی حضرت محمد ﷺ بچوں کی پیدائش پر گھٹی کے طور پر اپنا لعاب دہن انہیں چٹاتے تو ہر وہ بچہ اپنے عہد کا سب سے مقبول اور علم و شجاعت میں یکتا ہوا جس کو یہ نعمت محمدی ﷺ حاصل ہوئی ـ سرکار دوعالم بیماروں کو دم فرماتے اور ان کے زخموں پر لعاب مبارک لگاتے تو ان

کے زخم فوری مندمل ہوجاتےاس ضمن میں بخاری ،مسلم سمیت دیگر کتب میں مستند احادیث موجود ہیں.آقائے دوجہاں ﷺ اپنا مبارک لعابِ دہن اپنی انگشتِ شہادت سے زمین پر ملتے اور اسے منجمد کر کے بیمار شخص کی تکلیف کی جگہ پر ملتے اور اللہ تعالیٰ سے اس کی شفایابی کی دعا فرماتےاس دعا کا ذکر حضرت عائشہ ؓ یوں بیان

فرماتی ہیں” جب کوئیانسان تکلیف میں ہوتا یا اسکو کوئی زخم ہوتا تو حضور نبی اکرم ﷺ اپنا لعاب دہن صاف مٹی کے ساتھ ملا کر لگاتے اور اس کی شفایابی کے لئے یہ مبارک الفاظ دہراتےحافظ ابن حجر عسقلانی ؒ لکھتے ہیں کہ ….”حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے الفاظ ”ہم میں سے کسی کے لعاب دہن سے“ سے ثابت ہوتا ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم دم فرماتے وقت مبارک لعابِ دہن لگایا کرتے تھے