crossorigin="anonymous">

حضرت موسیٰؑ کی قبر کے بارے میں آج تک کسی کو نہیں معلوم ۔۔ وہ مقام جس کی خواہش آپ ﷺ نے صحابہ کرام سے کی تھی، دیکھیے موسیٰؑ کا عصا کیسا تھا؟ مذید دیکھیں ویڈیو میں

حضرت موسیٰؑ جن کو کلیمُ اللہ کہا جاتا ہے۔ ان کے متعلق ہم سب ہی جانتے ہیں کہ انہوں نے اللہ سے ملنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا تو کوہِ طور پر اللہ نے جب اپنی ہلکی سے جھلک دکھائی تو وہ بیہوش ہوگئے۔ حضرت موسیٰؑ کی پیدائش مِصر میں ہوئی۔ حضرت ہارونؑ آپؑ کے حقیقی

بڑے بھائی تھے۔ حضرت موسیٰؑ کی دُعا کی بہ دولت  اللہ تعالیٰ نے اُنھیں بھی نبوّت عطا فرمائی۔ چونکہ فرعون نے ایک خواب دیکھا تھا کہ بنی اسرائیل میں پیدا ہونے والا بچہ اس کی سلطنت کو تباہ کردے گا جس کے بعد اس نے لاکھوں نومولود بچوں کو

جان سے مارا۔ لیکن چونکہ اللہ نے موسیٰؑ کے لیے کچھ منفرد سوچ رکھا تھا لہٰذا وہ زندہ بچ گئے اور اپنی پوری زندگی اللہ کے دین کی خاطر صرف کردی۔

حضرت موسیٰؑ کے معجزات میں ان کی لاٹھی بھی تھی جو سانپ بن جاتی تھی۔ اس کی ایک شبیہہ اردن میں بنائی گئی ہے جہاں حضرت موسیٰؑ کی قبرِ مبارک بھی ہے۔ لیکن آج تک موسیٰؑ کی قبر کے بارے میں اللہ تعالیٰ اور حضرت محمد ﷺ کے سوا کوئی نہیں جانتا کہ وہ حقیقت میں کس جگہ موجود ہیں۔ ایک ویلاگر زبیر جو

اسلامی ویڈیوز اور مختلف تاریخی مقامات پر جاتے رہتے ہیں انہوں نے اردن کے اس مقام پر یہ ویڈیو بنائی جہاں حضرت موسیٰؑ کی لاٹھی جیسی ایک لاٹھی بنا رکھی ہے۔ یہ لاٹھی پہاڑی پر واقع ایک پہاڑ کے اوپر جگہ بنا کر نصب کر رکھی ہے جس پر ایک سانپ بھی شبیہہ کے طور پر بنایا ہوا ہے۔

یہ وہ مقام ہے جہاں جانے کے لیے آپ ﷺ نے صحابہ کرام سے خواہش کی تھی کہ میں بھی وہاں جانا چاہتا ہوں۔ اس مقام سے قریب ہی کچھ فاصلے پر بیت المقدس اور فلسطین واقع ہے۔ یہی وہ جگہ ہے جہاں حضرت موسیٰؑ کا وصال ہوا اور اسی جگہ پر ان کی قبر ہے جس کی تشخیص نہیں کی جاسکتی۔ یہ جگہ جبلِ نیبو کے نام سے مشہور ہے۔

Check Also

پاکستان میں موجود قرآن کا پہاڑ جہاں کروڑوں قرآن محفوظ ہیں ۔۔ جانیئے اس پہاڑ میں کیا راز دفن ہیں؟

دنیا میں کئی جگہیں ایسی دریافت ہوئیں جہاں قرآن مجید کے کئی پرانے اوراق برآمد …

Leave a Reply

Your email address will not be published.