سرکاری ملازمین کااحتجاج ،مولانافضل الرحمٰن نےکپتان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

سرکاری ملازمین کااحتجاج ،مولانافضل الرحمٰن نےکپتان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

حیدرآباد: پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نےکہا ہےکہ ماضی کے مقابلے موجودہ حکومت کے تین سالہ دور میں کئی گنا زیادہ کرپشن بڑھی ہے،اب حکومتی پارٹی کے اندرسے احتساب کی آوازیں بلند ہورہی ہیں۔حیدرآباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نےکہا کہ مظاہرین کے جمہوری

حق کوتسلیم کرتے ہیں اور ان کے شانہ بشانہ کھڑے رہیں گے، داسوڈیم کے ملازمین پراہلکاروں نے گولیاں چلائیں۔ انہوں نےکہا کہ نیب صرف ایک مہرا ہے، ماضی کے مقابلے میں کئی گنا زیادہ کرپشن بڑھی ہے اور اب حکومتی پارٹی کے اندرسے احتساب کی آوازیں بلند ہورہی ہیں۔مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ووٹ قوم کاحق ہے، تمام ریاستی

ادارے عوام کے خادم ہیں لہٰذا تمام ادارے آئینی دائرے میں اپنے فرائض انجام دے۔ایک سوال کے جواب میں پی ڈی ایم سربراہ نے کہا کہ تحریک تحریک ہوتی ہے اور ضروری نہیں اس کے نتائج ملیں۔مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ حکومت کی ناکام کارکردگی کے نتیجے نے پورے ملک کے عوام حتیٰ کہ سرکاری ملازمین کو اس حد تک مجبور کر دیا کہ وہ اسلام آباد جائیں تاکہ ان کی چیخ و پکار سنی جا سکے، اسلام آباد میں سرکاری ملازمین کا اپنے حق کے لئے

مظاہرہ تھا لیکن بدکردارحکومت نے ملازمین پر جو تشدد کیا، اسے ریاستی تشدد سمجھتا ہوں، سرکاری ملازمین کے مسائل سے آگاہ ہیں، ہم ان کے احتجاج کا حصہ بنیں گے اور حکومت کے ظلم اور جبر کا پردہ چاک کرتے رہیں گے۔ سربراہ پی ڈی ایم نے کہا کہ ہم ریاست کے ساتھ ہیں، اگر ریاست کے ادارے عوام کے خلاف کردار ادا کریں گے تو ہم چپ چاپ بیٹھے نہیں دیکھ سکتے، تمام ادارے قوم اور ملک کے خادم ہیں، ہم انہیں سیاست میں نہیں گھسیٹ رہے

ہم کہہ رہے ہیں کہ بیرکوں میں جائیں، چاہتے ہیں ہر ادارہ اپنے آئینی دائرہ کار میں رہتے ہوئے کام کرے، ہم ایک دوسرے کے علاقوں میں کیوں جا رہے ہیں۔پی ٹی آئی اراکین کے گزشتہ سینیٹ انتخابات کے سلسلے میں پیسے لینے کی ویڈیوز لینے کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ویڈیو پی ٹی آئی کے اپنے اراکین کی ہے، جو گند ان کا اپنا ہے، وہ اپنے منہ پر ملیں، دوسروں کے منہ پر نہ ملیں۔۔بات کو جاری رکھتے ہوئے سربراہ

جے یو آئی ایف نے ایک مرتبہ پھر دہرایا کہ ہمارا دامن صاف ہے۔ماضی میں ریاست کے بیانیے کی تائید کرنے والی جماعتوں کی پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں شمولیت اور اب اسٹیبلشمنٹ سے معافی کے مطالبے سے صورتحال نہیں ہونے جارہی؟ کے جواب میں انہوں نے کہا کہ صورتحال یقیناً خراب ہے اچھی نہیں ہے اور قوم کے سامنے سراینڈر ہوگا کسی سیاسی جماعت کے سامنےنہیں۔