عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے مریم نواز کی زبان پھسل گئی، انڈے کتنے روپے کلو ؟ سوشل میڈیا پر نیا طوفان کھڑا ہوگیا

عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے مریم نواز کی زبان پھسل گئی، انڈے کتنے روپے کلو ؟ سوشل میڈیا پر نیا طوفان کھڑا ہوگیا

لاہور (ویب ڈیسک) ڈسکہ میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے مریم نواز کی زبان پھسل گئی، انڈوں کی قیمت کلو میں پوچھ لی ۔ تفصیلات کے مطابق ڈسکہ میں ضمنی انتخابات کے سلسلے میں ہونے والے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز جوش خطابت میں سوال کر بیٹھیں کہ عوام بتائے کہ ’’آج انڈے کتنے روپے کلو ہیں‘‘ ۔

.مریم نواز تو جوش خطابت میں یہ کہہ گئیں لیکن اس کے بعد پاکستان میں ٹوئٹر پر ‘انڈے کتنے روپے کلو’ ٹاپ ٹرینڈ میں شامل ہوگیا ۔  جلسے کے دوران مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے مہنگائی کے حوالے سے حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے عوام سے پوچھا کہ ‘ آج انڈے کتنے روپے کلو ہیں’۔ مریم نواز کا یہ جملہ دیکھتے ہی دیکھتے سوشل


میڈیا پر چھا گیا اور پاکستان میں ٹوئٹر پر ٹاپ ٹررینڈز میں شامل ہے۔واضح رہہے کہ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا تھا کہ خواجہ آصف کو انہوں نے کہا کہ نوازشریف کو چھوڑدو ، خواجہ آصف نے کہا مرجاؤں گا نوازشریف کا ساتھ نہیں چھوڑوں گا، خواجہ آصف نے جو بات اسمبلی کہی تھی وہ آج پورا پاکستان کہہ رہا ہے۔ یہ

الیکشن نہیں ایک جنگ ہے، اپنی بہن نوشین کو فتح یاب کرنا ہے، یہ جنگ نوازشریف نے ووٹ چوروں کیخلاف شروع کررکھی ہے، نوازشریف نے 70سال کی عمر میں ، بیماری کے باوجود بے گناہ جیل کاٹی اپنی بیٹی کے دوباربے گناہ جیل کاٹنے کے باوجود سرنہیں جھکایا، نوازشریف نے4سال پہلے کہا تھا بچے تمہارے بس کا روگ نہیں ہے یہ، جاؤ بیٹا کرکٹ کھیلو، گوجرانوالہ کے جلسے میں نوازشریف نے کہا عمران خان تمہیں خوش ہونے کی ضرورت نہیں، ہماری جنگ

تمہارے ساتھ نہیں تم تو ایک لے پالک بچے ہوہماری جنگ تمہارے بڑوں کے ساتھ ہے، ڈسکہ والو! مجھے خوشی ہورہی ہے اللہ کا شکر ادا کررہی ہوں، پنجاب تاریخ میں پہلی بات حق کیلئے کھڑا ہوگیا ہے۔تابعدار بندے کا نام سلیکٹڈ ہے، سلیکٹ کرکے لائے تھے کہ عوام کی خدمت کرے گا، لیکن وہ عوام کی بجائے سلیکٹرز کی خدمت کرنے میں لگا ہوا ہے، جب عوام کہتے ہیں آٹا ، چینی ، بجلی گیس، ادویات مہنگی تو کہتا میرے پاس جادوکا بٹن نہیں،

کہ سب ٹھیک ہوجائے۔کہتا عوام بھوکی مرے تو میں کیا کروں؟ یہ الیکشن نہیں جنگ ہے جس میں ایک طرف نوازشریف اور دوسری طرف آٹا چور ہیں، نوازشریف نے محنت کرکے بجلی کے کارخانے کھڑے اور 22، 22گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کو ختم کیا، دوسری طرف بجلی چور ایل این جی مہنگی خریدی، سیالکوٹ ڈسکہ میں جب پی ٹی آئی کا بندہ ووٹ مانگنے آئے تو پوچھنا عوام کی بجلی، گیس، روٹی، دوائی چوری کرکے کس منہ سے ووٹ مانگنے آئے ہو؟ جب وزراء کہتے مہنگائی زیادہ ہوگئی عوام بھوکے مررہے ہیں کہتا اپنے خرچے کم کرو، 50لاکھ گھروں اور ایک کروڑ نوکریوں کا اعلان کرنے والے کٹے مرغیوں پر آگیا ہے۔