نوکریاں ہی نوکریاں ۔۔پاکستانیوں کی سنی گئیحکومت کے اعلان نے سب کے دل جیت لیے

نوکریاں ہی نوکریاں ۔۔پاکستانیوں کی سنی گئیحکومت کے اعلان نے سب کے دل جیت لیے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے پاکستان پوسٹ آفس کی جدیدٹیکنالوجی پرمشتمل فرنچائزکھولنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ نئی فرنچاز ای کامرس سمیت مختلف جدید سہولیات سے لیس ہوں گی ،لاکھوں لوگ اس سے مستفید ہوسکیں گے ،عوام فوری اور بروقت سروسز استعمال کرسکیں گے ۔پوسٹل سٹاف

کالج میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مراد سعید نے کہاکہ وزارت سنبھالی تو پاکستان پوسٹ آفس کا خسارہ ساٹھ ارب روپے تھاکوئی پاکستان پوسٹ استعمال کرنے کیلئے تیار نہیں تھا،توہم نے کون سے ایسے اقدامات کیے جس سے پاکستان پوسٹ آفس ایک مرتبہ پھر اپنے قدموں پر اٹھ کھڑا ہوا اور لوگو ں کا اعتماد بحال کیا ۔انہوں نے کہاکہ سب

سے پہلے ہم نے اخراجات میں کمی کے حوالے سے قدم اٹھایا کیونکہ وزیراعظم عمران خان نے ہمیں سادگی اور کفایت شعاری کا درس دیا تھا اس لئے ہم نے کفایت شعاری کے ویژن کے تحت پوسٹ آفس کے اخراجات کو کم کیا ۔جب وزیراعظم اپنے خرچے کم کرسکتے ہیںتو پھر ہمیں بھی کرنے چاہئیں ۔اس کے بعد ہم نے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال

کیا اور تقریبا دو سو کے قریب سروسز فراہم کیں ،کوالٹی اور فوری سہولیات فراہم کیں جس کے باعث پوسٹ آفس اٹھ کھڑا ہوا ۔انہوں نے کہاکہ ہم میڈیا کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے پاکستان پوسٹ آفس کو جدید خطوط پر استوار کرنے میں تعاون کیا ۔انہوں نے کہا کہ موبائل ایپ متعارف کرا دی ،ہم نے جب یو ایم ایس سروس شروع کی تو لوگوں نے بہت تعریفیں کی ،ہم نے ای ایم ایس پلس بیرون ممالک رہنے والے پاکستانیوں کیلئے سروس شروع

کی پھر اس کے بعد ہم ای کامرس پورٹل بھی بنائیں گے ، الیکٹرنک منی آرڈر شروع کررکھا ہے جس میں پچاس ہزار پر پانچ سوکٹوتی ہوتی ہے لیکن اگر پچاس ہزار پرائیویٹ طریقے سے بھیجیں تو اس پر ڈھائی ہزار تک کٹوتی ہوتی ہے ۔نئی فرنچائزبھی بنائی جارہی ہیں جن میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال ہو گا ۔ایک لاکھ کے لگ بھگ دفاتر کھولیں گے جن سے لاکھوں افراد مستفید ہوں گے ۔‎اس سال دو ہزار ڈیجیٹل فرنچائز بنیں گی ،دیہاتوں میں بھی فرنچائز قائم کریں گے اور لوگ ہم سے فرنچائز خریدنے کیلئے رابطے کررہے ہیں ۔ایک پوسٹ آفس میں کم ازکم تین لوگوں کو روز گارملے گا اور ہم فرنچائز کی تعداد ایک لاکھ سے اوپر لے جائیں گے اور اس سے تین سے چار لاکھ لوگوں

کو روزگار ملے گا ۔انہوں نے کہاکہ فرنچائز کھلنے سے بڑے شہروں میں پوسٹ آفس میں کام کرنیوالےملازمین پر بھی بوجھ کم ہوجائیگااوروہ پرسکون ماحول میں کام کرسکیں گے ۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنے کسٹمرز کو ناامید نہیں کریں گے اور جو بھی ہم سے ممکن ہو سکا وہ ان کو سہولیات فراہم کریں گے ۔انہوںنے کہاکہ ساٹھ ارب روپے کا خسارہ تھا اب ریونیوبڑھنا شروع ہوگیا کبھی کبھار پرانے والا خسارہ اخبار کی سرخی بنا دی جاتی ہے لیکن تازہ اعداد وشمار دیکھیں تو آپ کو نیا پاکستان نظر آجائے گا ۔انہوں نے کہاکہ میں اپنے تمام افسران کو بتانا چاہتا ہوں کہ تمام پوسٹ آفس کے ملازمین کو علاج ومعالجے کی مفت سہولیات بھی فراہم کریں گے کیونکہ یہ عمران خان کا ویژن

ہے جس پر ہم ہرصورت عملدرآمد کرینگے ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان پوسٹ میں 9ہزارآسامیاں آئیں لیکن مجھے کہا گیا کہ ان میں مزید اضافہ کریں تاہم میں نے کہا کہ پاکستان پوسٹ آفس میں جتنی آسامیاں خالی ہوں گی اتنی ہی دی جائینگی ہم ایک بھی اضافی آسامی نہیں دے سکتے اس سے ادارے پرمزید بوجھ بڑے گا اگرپوسٹ کا خسارہ ساٹھ ارب کا خسارہ پہنچا گیا تو یہ عوام کی جیبوں سے نکالا جارہا تھا،جب تمام ادارے خسارے میں ہوں تو ان کا خسارہ پورا کرنے کیلئے عوام کی جیبوں سے پیسے نکالے جاتے ہیں جس سے عوام پر بھی بوجھ بڑھتا ہے۔انہوں نے کہاکہ جب پاکستان پوسٹ آفس اس قابل ہو گیا تو ہم آٹھ ہزار نہیں لاکھوں آسامیاں کو دیں گے ۔