کیا واقعی سینیٹ ٹکٹ 35کروڑروپے میں خریدا تھا؟پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر سیف اللہ ابڑوکا بھی بیان آگیا

کیا واقعی سینیٹ ٹکٹ 35کروڑروپے میں خریدا تھا؟پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر سیف اللہ ابڑوکا بھی بیان آگیا - Pakistan News Network

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پی ٹی آئی رہنما اورسابق وزیر اعلیٰ کی جانب سے سینیٹ ٹکٹ35کروڑروپے میں خریدنے کا الزام عائد کر نے پر سیف اللہ ابڑو نے ان کو قانونی نوٹس بھجوانےکا الزام عائد کر دیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ میں پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر سیف اللہ ابڑونے پی ٹی آئی سندھ کے سینئر رہنما لیاقت

جتوئی کو قانونی نوٹس بھجوانے کا اعلان کردیا ہے۔ لیاقت جتوئی کی جانب سے سینیٹ ٹکٹ 35کروڑ روپے میں خریدنےکاالزام عائد کیے جانے پر سیف اللہ ابڑونےاپنا رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ خان بہادر آپ کو اخلاقیات کا پتہ ہی نہیں ہے۔ آپ نےجو الزامات لگائے ہیں ،ان پر آپ کو جواب دینا پڑے گا۔میں آپ کو قانونی نوٹس بھجوا رہا ہوں ،

اب عدالت میںملاقات ہوگی۔کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پی ٹی آئی رہنما اورسابق وزیر اعلیٰ کی جانب سے سینیٹ ٹکٹ35کروڑروپے میں خریدنے کا الزام عائد کر نے پر سیف اللہ ابڑو نے ان کو قانونی نوٹس بھجوانےکا الزام عائد کر دیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ میں پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر سیف اللہ ابڑونے پی ٹی

آئی سندھ کے سینئر رہنما لیاقت جتوئی کو قانونی نوٹس بھجوانے کا اعلان کردیا ہے۔ لیاقت جتوئی کی جانب سے سینیٹ ٹکٹ 35کروڑ روپے میں خریدنےکاالزام عائد کیے جانے پر سیف اللہ ابڑونےاپنا رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ خان بہادر آپ کو اخلاقیات کا پتہ ہی نہیں ہے۔ آپ نےجو الزامات لگائے ہیں ،ان پر آپ کو جواب دینا پڑے گا۔میں آپ کو قانونی نوٹس بھجوا رہا ہوں ، اب عدالت میںملاقات ہوگی۔کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پی ٹی آئی رہنما اورسابق وزیر اعلیٰ کی جانب سے سینیٹ ٹکٹ35کروڑروپے میں خریدنے کا الزام عائد کر نے پر سیف اللہ ابڑو نے ان کو قانونی

نوٹس بھجوانےکا الزام عائد کر دیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ میں پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر سیف اللہ ابڑونے پی ٹی آئی سندھ کے سینئر رہنما لیاقت جتوئی کو قانونی نوٹس بھجوانے کا اعلان کردیا ہے۔ لیاقت جتوئی کی جانب سے سینیٹ ٹکٹ 35کروڑ روپے میں خریدنےکاالزام عائد کیے جانے پر سیف اللہ ابڑونےاپنا رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ خان بہادر آپ کو اخلاقیات کا پتہ ہی نہیں ہے۔ آپ نےجو الزامات لگائے ہیں ،ان پر آپ کو جواب دینا پڑے گا۔میں آپ کو قانونی نوٹس بھجوا رہا ہوں ، اب عدالت میںملاقات ہوگی۔