پاکستانی دلہن شادی کی تقریب میں جاتے ہوئے راستے سے بھاگ نکلی، پولیس سٹیشن جا کر بیان ریکارڈ کروادیا

سکھر(مانیٹرنگ ڈیسک)سندھ کے ضلع کشمور میں ایک دلہن رخصتی کے بعد باراتیوں کو چکمہ دے کر پولیس سٹیشن پہنچ گئی اور زبردستی شادی کروانے کا مقدمہ درج کروا دیا۔ ڈیلی ڈان کے مطابق پرویزن خاتون نامی اس دلہن کی شادی قادرو بگٹی نامی شخص کے ساتھ ہوئی تھی۔ نکاح کے بعد جب بارات ٹریکٹر ٹرالی پر دلہن کو لے

کر جا رہی تھی ، راستے میں تنگوانی قصبے کے قریب دلہن نے قے آنے کی شکایت کرکے ٹریکٹر رکوا لیا اور قے کے لیے ٹرالی سے نیچے اتر گئی اور وہاں سے فرار ہو گئی۔رپورٹ کے مطابق پرویزن خاتون فرار ہو کر قریبی پولیس سٹیشن پہنچ گئی اور وہاں جا کر بیان دے ڈالا کہ وہ پہلے سے شادی شدہ اور ایک بیٹے کی ماں ہے، جس کا نام خالد ہے۔

اس کے چچا نے اسے قادرو بگٹی کے ہاتھ7لاکھ روپے میں فروخت کر ڈالا ہے اور زبردستی اس کے ساتھ دوسری شادی کروا دی ہے۔ پرویزن نے بتایا کہ اس نے جان بوجھ کر پولیس سٹیشن کے پاس آ کر قے کا بہانہ کیا تاکہ پکڑے جانے سے پہلے ہی پولیس تک پہنچ سکے۔ دلہن کی رپورٹ پر پولیس فوری طور پر وہاں کھڑی ٹریکٹر ٹرالی کے پاس گئی اور پوچھ گچھ کی تاہم دولہا پہلے ہی وہاں سے فرار ہو چکا تھا۔ پولیس نے پرویزن خاتون کو شیلٹر ہوم منتقل کر دیا ہے جہاں سے اسے عدالت میں پیش کیا جائے گا۔