رمضان المبارک کے آغاز میں وقت کم رہ گیا، رواں سال روزے 30 ہوں گے یا 29؟پیشنگوئی کر دی گئی

رمضان المبارک کے آغاز میں وقت کم رہ گیا، رواں سال روزے 30 ہوں گے یا 29؟پیشنگوئی کر دی گئی

ریاض (نیوز ڈیسک) رمضان المبارک کے آغاز میں کم وقت رہ گیا، سعودی عرب میں ماہ شعبان کے آغاز کی تاریخ کا اعلان کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ مملکت میں آج بروز ہفتہ شعبان کا چاند نظر نہیں آیا، یوں ماہ رجب 30 ایام کا ہوگا۔ اعلان کے مطابق سعودی عرب میں یکم شعبان

پیر 15 مارچ کو ہوگی۔مملکت میں ماہ شعبان کے آغاز کی تاریخ کا اعلان کیے جانے کے بعد فرزندان اسلام رمضان المبارک کے آغاز کا بھی بے صبری سے انتظار کرنے لگے ہیں۔ اسلامی ممالک میں اسلامی تہوار بہت زیادہ مذہبی جوش و خروش سے منائے جاتے ہیں۔ تاہم سب سے زیادہ اہمیت رمضان المبارک کی ہوتی ہے ۔ماہِ رمضان کو تمام

اسلامی مہینوں میں فضیلت حاصل ہے۔یہ رحمتوں ، برکتوں اور فضائل سے بھرا مہینہ مسلمانوں کی شفاعت و مغفرت اور نیکیاں سمیٹنے کا مہینہ ہے، روح کی پاکیزگی حاصل کرنا بھی اس مہینے میں ممکن ہو جاتا ہے، یہی وجہ ہے کہ مومنین کو اس مہینے کا بے تابی سے انتظار ہوتا ہے۔ماہ رمضان کی آمد میں اب صرف ڈیڑھ ماہ کا

وقت باقی رہ گیا ہے۔ ایسے میں کئی اسلامی ممالک کے ماہرین فلکیات کی جانب سے رمضان المبارک کے آغاز کی ممکنہ تاریخ کے حوالے سے ماہرانہ پیشن گوئی کی جا رہی ہے۔ اس حوالے سے سعودی عرب کے بھی ایک معروف ماہر فلکیات اور القصیم یونیورسٹی میں جغرافیا وموسمیات کے استاد پروفیسر عبداللہ المسند کی جانب سے بھی پیشن

گوئی کی گئی ہے۔پروفیسر عبداللہ نے 1442ھ کے ماہ رمضان کے آغاز کے علاوہ عید الفطر کی تاریخ کے بارے میں بھی پیش گوئی کی ہے۔ پروفیسر عبداللہ کے مطابق اس سال سعودی عرب میں ماہ شعبان المعظم 30 ایام کا ہوگا۔ یوں مملکت میں منگل 13 اپریل کو رمضان المبارک کا چاند نظرآئے گا، یکم رمضان 14 اپریل کو ہوگی۔ ان کا

مزید کہنا ہے کہ شعبان کی طرح رمضان المبارک کا مہینہ بھی 30 ایام پر مشتمل ہوگا۔ 29 رمضان المبارک کو سعودی عرب میں شوال کا چاند نظر بہت مشکل ہے، اس طرح رمضان المبارک 30 ایام کا ہو گا اور مملکت میں عید الفطر 13 مئی بروز جمعرات کو ہوگی۔