بریکنگ نیوز:پنجاب کے بعد ایک اور اہم ترین صوبے میں لاک ڈاؤن کا حکم دے دیا گیا

بریکنگ نیوز:پنجاب کے بعد ایک اور اہم ترین صوبے میں لاک ڈاؤن کا حکم دے دیا گیا

کراچی (ویب ڈیسک)کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے بعد سندھ میں ایک بار پھر سمارٹ لاک ڈاؤن کے حکم پر تاجروں اور شادی ہالز مالکان نے شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے ایس او پیز کے تحت کاروبار جاری رکھنے کی اجازت کا مطالبہ کیا ہے جبکہ آل سٹی تاجر اتحاد نے ہنگامی اجلاس طلب کرلیا۔تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت

کی جانب سے صوبے بھر میں ایک ماہ کیلئے سمارٹ لاک ڈاؤن کے فیصلے پر میرج ہالز ایسوسی ایشن کراچی کے صدر رانا رئیس احمد نے کہا کہ کورونا خدشات کے پیش نظر پہلے ہی شادی ہالز میں شادی بیاہ و دیگر تقریبات مکمل ایس او پیز کے تحت کی جارہی تھیں، ہم نے پہلے بھی کورونا کا مقابلہ کیا ہے اوراب بھی ملکر کورونا کی

تیسری لہر کامقابلہ کریں گے،شادی کی تقریبات میں لوگ حکومت کی جانب سے دی گئی تعداد اور ایس او پیز کا خیال رکھتے ہوئے شرکت کریں۔ دوسری جانب صدر میرج ہالز ایسوسی ایشن لاہور ملک اشفاق اشرف نے اپنے ایک اعلامیہ میں کہا ہے کہ میرج ہالز پر بندش بیروزگاری کا سیلاب لے آئے گی ، گزشتہ برس لاک ڈاؤن سے میرج ہالز کا

کاروبار تباہی کی نذر ہو گیا تھاجبکہ حکومت نے کوئی ریلیف دیا اور نہ ہی کوئی مدد کی، اب جب ہم کورونا ایس او پیز کے ساتھ جینا سیکھ گئے ہیں تو دوبارہ غلط طریقے سے لاک ڈاؤن کو مسلط کیا جا رہا ہے،میرج ہالز برباد ہو رہے ہیں،ملکی معیشت برباد ہو جائے گی، لوگوں کے رزق حلال کو روکا نہ جائے، ہم پاکستان کے شہری اور ٹیکس

دہندہ ہیں،ہمیں کاروبار کرنے دیا جائے۔ سکھر اور حیدرآباد میرج ہالز کے نمائندوں کا کہنا ہے کہ جو میرج ہالز، مارکیز ہوادار،روشن اور ڈس انفیکشن کی مکمل صلاحیت کےحامل ہیں اُنہیں ایس او پیز کے تحت کام کرنے کی اجازت دی جائے،موجودہ بندش کے احکامات سے میرج ہالز سے وابستہ ملازمین کے گھروں کے چولہے بجھ جائیں گے۔