مریم نواز نے عمران خان کا متبادل کس کو کہا؟ خود ہی خاموشی توڑ دی

مریم نواز نے عمران خان کا متبادل کس کو کہا؟ خود ہی خاموشی توڑ دی

لاہور (نیوزڈیسک )مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ سلیکٹڈ کے متبادل سے متعلق ٹوئٹ میں اشارہ کر نا مقصد تھا ۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران صحافی نے سوال کیا کہ اپنے ٹوئٹ میں سلیکٹڈ کا متبادل کس کو قرار دیا تھا جس پر مریم نواز نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ اپنے ٹوئٹ میں اشارہ کرنا تھا

جو کردیا ،کھل کرنہیں بولنا تھا ۔واضح رہے کہ پی ڈی ایم کے اجلاس کے بعد مریم نواز نے معنی خیزانداز میں ایک ٹوئٹ کیا تھا جس میں ان کا کہنا تھا کہ جب آپ کو معلوم ہو کہ کیا ہو رہا ہے اور کیوں ہو رہا ہے تو پھر آپ کو خراب دن بھی خراب نہیں لگتا، سچی بات یہ ہے کہ اب سلیکٹڈ کو فکر مند ہونا چاہیے کیونکہ سلیکٹڈ کی طاقت

کم ہو رہی ہے اور اس کا متبادل تیا ر کیا جا رہا ہے۔ مریم نواز کی گرفتاری کا امکان، مریم نواز کی قانونی ٹیم نے اہم مشورہ دیدیا لاہور (پی این آئی) پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی نیب پیشی پر ممکنہ گرفتاری سے بچنے کے پیش نظر انہیں ضمانت کرانے کا مشورہ دیا گیا ہے۔قانونی ٹیم اور سینئر لیگی رہنماؤں کی

جانب سے مریم نواز کو ضمانت قبل از گرفتاری کا مشورہ دیاگیا ہے۔ذرائع کے مطابق چند لیگی رہنماؤں کو مریم نواز کو نیب پیشی پر گرفتار کیے جانے کی اطلاعات بھی ملی ہیں۔ن لیگ کے کچھ لوگوں کے ابھی بھی نیب میں تعلقات ہیں،گرفتاری سے بچنے کے لیے مریم نواز کو قانونی حق استعمال کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔اس سلسلے میں

آج ایک اور میٹنگ میں مشاورت ہوگی۔نواز شریف کے منظوری کے بعد ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست کا فیصلہ ہوگا۔نیب لاہور نے مریم نواز کو دو کیسز میں 26 مارچ کو طلب کر رکھا ہے۔تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ مریم نواز بذات خود ضمانت قبل از گرفتاری کروانے میں دلچسپی نہیں رکھتی لیکن یہ معاملہ نواز شریف پر چھوڑ دیا

گیا ہے ان کے فیصلے کے مطابق عمل کیا جائے گا۔واضح رہے کہ قومی احتساب بیورو کی طرف سے پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز کو چوہدری شوگر ملز کے علاوہ ایک اور کیس میں طلب کیا گیا ہے ، نیب نے مسلم لیگ کی مرکزی رہنما کو26 مارچ کو پیش ہونے کا نوٹس جاری کردیا ، جس میں انہیں 1500 کنال اراضی

کی مبینہ غیرقانونی منتقلی کیس میں طلب کیا گیا ہے ، جب کہ انہیں پیشی کے موقع پر اپنے ساتھ مطلوبہ ریکارڈ لانے کی بھی ہدایت کی گئی ہے ، اس کے علاوہ قومی احتساب بیورو نے چوہدری شوگر ملز کیس میں مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز کو دوبارہ طلب کیا ہوا ہے ، اس کیس میں بھی مریم نواز کو 26 مارچ بروز جمعہ نیب لاہور میں پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے۔اس سلسلے میں میڈیا ذرائع کا کہنا ہے کہ مریم نواز کے حوالے سے نیب لاہور کو نئے شواہد موصول ہوئے ہیں ، جن کی بناء پر انہیں ایک بار پھر طلب کیا گیا ہے جب کہ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز اس سے قبل 11 اگست 2020 کو نیب لاہور میں پیش ہوئی تھیں۔