براڈ شیٹ کی رقم غلط افراد کو ادا کرنے کا ذمہ دار کون ؟ براڈ شیٹ کمیشن نے اہم عہدیدار کو ذمہ دار قرار دے دیا

براڈ شیٹ کی رقم غلط افراد کو ادا کرنے کا ذمہ دار کون ؟ براڈ شیٹ کمیشن نے اہم عہدیدار کو ذمہ دار قرار دے دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) براڈ شیٹ انکوائری کمیشن رپورٹ نے 15 لاکھ ڈالر کی غلط ادائیگی کا ذمہ دار سابق ڈپٹی ہائی کمشنر لندن عبدالباسط کو قرار دیدیا ہے۔دنیا نیوز کے مطابق رپورٹ میں سوال اٹھایا گیا ہے کہ کیا دنیا کا کوئی سفارتی معاہدہ ایسا ہوتا ہے جس میں جگہ خالی چھوڑی گئی ہو؟رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ غلط ادائیگی

کو صرف بے احتیاطی قرار نہیں دیا جا سکتا، اتنی بڑی رقم غلط شخص کو ادا کرنا ریاست پاکستان کے ساتھ دھوکہ ہے۔ وزارت خزانہ، وزارت قانون اور اٹارنی جنرل آفس سے فائلیں چوری ہوگئیں، پاکستانی ہائی کمیشن لندن سے بھی ادائیگی کی فائل سے مخصوص حصہ غائب ہوگیا۔رپورٹ میں ادائیگیوں میں تاخیر کی ذمہ داری موجودہ

دور کی بیوروکریسی کو بھی قرار دیا گیا ہے۔ادائیگیوں میں تاخیر سے نو ملین ڈالر جرمانہ ادا کرنا پڑا۔ گزشتہ روز براڈ شیٹ کی تحقیقات کرنے والے کمیشن نے رپورٹ مکمل کر کے وزیراعظم عمران خان کو پیش کر دی ہے۔ رپورٹ کے مطابق براڈشیٹ کمپنی کو 15 لاکھ ڈالر کی غلط ادائیگیاں کی گئیں، کمیشن نے نیب کو سوئس مقدمات کا سربمہر ریکارڈ کھولنے کی بھی سفارش کی ہے۔