رمضان المبارک میں عمرہ کے خواہشمند مسلمانوں کیلئے بڑی خوشخبری، سعودی حکومت نے اہم اعلان کردیا

رمضان المبارک میں عمرہ کے خواہشمند مسلمانوں کیلئے بڑی خوشخبری، سعودی حکومت نے اہم اعلان کردیا

ریاض(نیو ز ڈیسک) سعودی حکومت نے رمضان میں عمرہ کیلئے آنے والے معتمرین کو کورونا ویکسین لگوانے سے مستثنیٰ قرار دیدیا ہے۔سعودی وزارت حج اور عمرہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ایسے تمام زائرین کو رمضان میں عمرہ کرنا چاہتے ہیں، انہیں ویکسین لگوانے کی ضرورت نہیں، فی الحال ماہ رمضان میں عمرہ کی

اجازت کے لیے کورونا ویکیسینیشن کی شرائط لاگو نہیں ہیں۔قبل ازیں سعودی وزارت حج اور عمرہ کی جانب سے جاری سرکولر میں کہا گیا تھا کہ ملک میں حج اور عمرہ سے متعلق معاملات دیکھنے والے ادارے اپنے اسٹاف کو رمضان سے قبل کورونا ویکسین لگوانے کے پابند ہوں گے۔واضح رہے کہ اس سے قبل عمرہ زائرین کومکہ مکرمہ میں

آمد سے قبل کووِڈ-19 کی ویکسین لگوانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ جو لوگ عمرہ ادا کرنے کے خواہشمند ہیں انہیں احتیاط کے لیے کووِڈ-19 کی ویکسین لگوانی چاہیے۔سعودی عرب کے قائم مقام وزیراطلاعات ماجد القصبی نے کہا ہے کہ رواں سال کے آخر تک تمام مقامیوں اور غیرملکیوں کو کوروناویکسین لگا دی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت نے 2021 کے اختتام تک پورے عوام(غیرملکی سمیت) کو ویکسین فراہم کرنے کی حکمت عملی بنائی ہے اسی ضمن میں وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ سعودی عرب سب کو مفت ویکسین فراہم کرنے کا پابند ہے، رواں سال کے آخر تک ویکسی نیشن کو تکمیل تک پہنچائیں گے۔مملکت میں وزرائے اطلاعات،

ماحولیات اور صنعت نے مشترکہ پریس کانفرنس کی اس موقع پر وزارتوں کی کارکردگی اور عوامی دلچسپی سے متعلق اٹھائے جانے والے اقدامات سے آگاہ کیا گیا۔سعودی عرب کے قائم مقام وزیراطلاعات نے کہا کہ حکومت اپنے شہریوں کو صحت اور تعلیم کی خدمات مفت فراہم کرتی رہے گی، سعودی عرب یمن بحران کا بھی حل چاہتا ہے

لیکن حوثیوں کے حملے جاری ہیں۔ماجد القصبی کا مسئلہ فلسطین سے متعلق کہنا تھا کہ ہم فلسطینی عوام کے مؤقف کی حمایت کرتے رہیں گے۔دریں اثنا وزیر ماحولیات عبدالرحمن الفضلی نے بتایا کہ گرین سعودیہ اور مشرقی وسطیٰ مستقل منصوبہ ہے جس سے معیار زندگی بہتر ہوگا، سعودی عرب نے ماحول دوست شجر کاری اور آبی

وسائل کی افزائش کے شعبوں میں اچھے تجربات حاصل کرلیے ہیں، مستقبل میں گرین پراجیکٹ کے مثبت نتائج آئیں گے۔مشترکہ پریس کانفرنس میں وزیر صنعت و معدنیات بندر الخریف کا کہنا تھا کہ میڈ ان سعودی پروگرام سے لاکھوں نوکریاں پیدا ہوں گی، سعودی ساختہ پروگرام کا مقصد عوام کو ترقی کے عمل میں شریک کرنا ہے۔