محمد زُبیر نے آرمی چیف سے ملاقات کیوں کی؟ (ن) لیگ بھی زَد میں آگئی، لیگی رہنماء کے خلاف بڑی آواز بُلند

محمد زُبیر نے آرمی چیف سے ملاقات کیوں کی؟ (ن) لیگ بھی زَد میں آگئی، لیگی رہنماء کے خلاف بڑی آواز بُلند

لاہور (نیوز ڈیسک ) جے یو آئی کے سینئر رہنما حافظ حسین احمد کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے مولانا فضل الرحمن کو پی ڈی ایم کا نمائشی صدر بنایا تھا۔انہوں نے ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی آئی غیر فطری اور مفاداتی اتحاد تھا، پی ڈی ایم سے فائدہ اٹھانے کے لیے نواز شریف نے ہوشیاری سے کام لیا ،نمائشی صدر ہونے کی

وجہ سے مولانا فضل الرحمن سے اختلاف کیا تھا ،نواز شریف نے معاملہ سیدھا کرنے کے لیے پی ڈی ایم بنائی تھی۔انہوں نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی سیاسی انداز میں اپنے معاملات آگے بڑھا رہی تھی، پیپلز پارٹی نے بھی بڑی ہوشیاری سے پی ڈی ایم کو کٹھ پتلی بنا دیا تھا۔حافظ حسین احمد نے مزید کہا کہ کہ اے این پی نے انتہائی طور پر

اپنی سیاست کے لئے اہم فیصلہ کیا ہے شوکاز نوٹس تو مسلم لیگ ن اور ان کے رہنماؤں کو ملنا چاہیے تھا، محمد زبیر ملاقات کرتے تھے انہیں کوئی شوکاز نہیں دیا گیا،جے یو آئی رہنما نے کہا کہ ن لیگ یقیناً بڑی پارٹی تھی لیکن فضل الرحمان کو نمائشی رکھا گیا، پیپلزپارٹی نے بڑی ہوشیاری سے اپنے پتے کھیلے ہیں، ممکن ہے اب نئی سیاسی

صف بندی ملک میں رونما ہوجائے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے مخصوص مقاصد کے حصول کے لئے مولانا فضل الرحمن کو پی ڈی ایم کاصدر اور شاہد خاقان عباسی کو سیکریٹری جنرل بناکر ایک طرف شہباز شریف کے لیے ’’برادر یوسف ‘‘ بنے رہے تو دوسری جانب علاج کے بہانے ملک سے فرار ہو کر لندن بیٹھ

کر ’’رینٹل اتحاد‘‘ اور اس کی قیادت کو بے دریغ استعمال کیا ایک اورسوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ در پردہ ایک خاتون مسافر پر انتہائی خطرناک بیماری کا’’لیبل ‘‘ لگانے کی فریب کاری کی مکمل منصوبہ بندی کی گئی ہے اور مشہور و معروف انتہائی خطرناک وائرس ’’عدنان 21‘‘ کی تیسری لہر کی لندن سے نزول کی بھی اطلاع ہے۔