سوئس کیس اوپن اینڈ شٹ ہے، اگر خط لکھتا تو میرے ساتھ کیا ہونا تھا ، یوسف رضاگیلانی نے ناقابل یقین بات کہہ دی

سوئس کیس اوپن اینڈ شٹ ہے، اگر خط لکھتا تو میرے ساتھ کیا ہونا تھا ، یوسف رضاگیلانی نے ناقابل یقین بات کہہ دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینیٹر اور سابق وزیر اعظم سیدیوسف رضاگیلانی نے براڈ شیٹ معاملے پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہسوئس کیس اوپن اور شٹ کیس ہے اس وقت اگر میں خط لکھ دیتا تو مجھ پر آرٹیکل چھ لگ جاتا۔نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق یوسف رضا گیلانی کا کہناتھا کہ مسلم لیگ(ن) استعفوں کا

ملبہ پاکستان پیپلز پارٹی پر گرانا چاہتی ہے جب کہ خود ان کی استعفے دینے کی نیت نہیں ہے۔ ن لیگ صرف پیپلز پارٹی کو قصور وار ٹھہرانا چاہتی ہے، تمام معاملات کا جائزہ سی ای سی اجلاس میں لیں گے، اگر ہم استعفے دے بھی دیں تو ن لیگ نہیں دے گی۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے

وی وی آئی پی ہیلی کاپٹرز کی مرمت کے لیے 33 کروڑ روپے کی گرانٹ کی سمیت متعدد اہم منصوبوں کے لیے گرانٹ کی منظوری دیدی ہے۔تفصیلات کے مطابق وزارت دفاع کی جانب سے وزیراعظم اور صدر کے طیاروں کی مرمت کے لیے 33 کروڑ روپے طلب کیے گئے تھے۔جس کی سمری گزشتہ روز ای سی سی کو بھجوائی گئی ۔وزیر

خزانہ حماد اظہر کی زیر صدارت ای سی سی کے اہم اجلاس میں 8 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا۔جس میں وی وی آئی پی ہیلی کاپٹر کے لیے 33 کروڑ روپے کی گرانٹ منظور کی گئی۔اجلاس میں پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن (پی آئی اے) کے ری اسٹرکچرنگ پلان کی اصولی طور پر منظوری دی گئی اور اسے حتمی منظوری کے لیے کابینہ کو

بھجوادیا گیا۔ بجلی کی تقسم کار کمپنیوں کے پنشنرز کو ادائیگی اور انصاف امداد پروگرام کو فنڈز کی فراہمی کی منظوریاں دی گئیں۔ای ووٹنگ پر عمل درآمد سے متعلق کنسلٹنسی کے لیے 28 کروڑ روپے، ٹیوٹا کو اسکل فار آل منصوبے کےلیے 2 ارب 23 کروڑ روپے کی گرانٹ کی منظوری دی گئی۔اجلاس میں سرمایہ کاری بورڈ کو 30 کروڑ روپے کی سپلیمنٹری گرانٹس کی تجویز منظور کی گئی۔