سعودیہ میں مقیم پاکستانی اجازت نامے کے بغیر عمرہ کی ہرگز کوشش نہ کریں کیونکہ ۔۔۔وزارت داخلہ نے خبردار کر دیا

سعودیہ میں مقیم پاکستانی اجازت نامے کے بغیر عمرہ کی ہرگز کوشش نہ کریں کیونکہ ۔۔۔وزارت داخلہ نے خبردار کر دیا

مکہ معظمہ(ویب ڈیسک) رمضان المبارک کا آغاز ہونے والا ہے۔ اس بابرکت مہینے میں عمرہ کی سعادت حاصل کرنا لوگ بہت بڑی خوش نصیبی سمجھتے ہیں۔ خصوصاً سعودی عرب میں مقیم افراد کے پاس اس مقدس مہینے میں عمرہ کرنے کا بہت بڑا موقع ہوتا ہے۔ تاہم کورونا وبا کی وجہ سے اب سخت پابندیاں عائد ہیں ، جس کی وجہ

سے عمرہ اب اجازت نامے سے مشروط کر دیا گیا ہے۔سعودیہ میں مقیم پاکستانی خبردار ہو جائیں۔ سعودی وزارت داخلہ نے خبردار کیا ہے کہ عمرے کے لیے اجازت نامے کے بغیر حرم شریف جانے والے پر دس ہزار ریال جرمانہ ہو گا۔ دوسری جانب وزارت حج و عمرہ نے کہا ہے کہ سدایا کے تعاون سے اعتمرنا اور توکلنا ایپس کے نئے ایڈیشن جاری

کردیے گئے ہیں۔وزارت داخلہ کے عہدیدار نے جمعرات کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ المسجد الحرام، اس کے صحنوں، مطاف اور صفا ومروہ کے درمیان سعی سمیت تمام مقامات پر کرونا وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے حد سے زیادہ رش کو کنٹرول کرنے کی خاطر لگائی گئی پابندیوں کو موٴثر بنانے کے لیے طے کیا گیا ہے۔اگر کوئی شخص

رمضان المبارک کے دوران اجازت نامہ حاصل کیے بغیر عمرہ کرنے کے لیے جائے گا تو اسے دس ہزار ریال جرمانہ کیا جائے گا جبکہ المسجد الحرام میں اجازت نامے کے بغیر داخل ہونے کی کوشش کرنے پر ایک ہزار ریال جرمانہ کیا جائے گا- جرمانے کرونا وبا کے خاتمے کے اعلان تک برقرار رہیں گے-وزارت داخلہ نے سعودیوں اور غیر ملکیوں سے پر زور اپیل

کی ہے کہ جو لوگ عمرہ کرنا چاہتے ہوں یا نماز کے لیے المسجد الحرام جانے کے خواہش مند ہوں وہ جانے سے قبل اجازت نامہ ضرور حاصل کر لیں-وزارت داخلہ نے خبردار کیا کہ سیکیورٹی اہلکار تمام شاہراہوں، چیک پوسٹوں اور حرم شریف جانے والے راستوں پر اجازت نامے چیک کریں گے اور مقررہ نظام کی خلاف ورزی کرنے والوں کو حرم

شریف جانے سے روکیں گے-خبر رساں ادارے ایس پی اے کے مطابق وزارت حج و عمرہ نے سدایا کے تعاون سے اعتمرنا اور توکلنا ایپس کے نئے ایڈیشن جاری کردیے ہیں- سعودی شہری اور مقیم غیر ملکی رمضان کے دوران عمرہ، زیارت اور نماز کے اجازت نامے ان کے ذریعے ہی حاصل کر سکیں گے جبکہ توکلنا ایپ پر اجازت نامے دیکھے جا سکیں گے۔