پی ڈی ایم کو دھچکا! پیپلز پارٹی نے بہت بڑا فیصلہ کر لیا

پی ڈی ایم کو دھچکا! پیپلز پارٹی نے بہت بڑا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) حکومت مخالف اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں شامل جماعتوں کے مابین اختلافت شدت اختیار کر گئے ہیں جس کے پیش نظر اب پاکستان پیپلز پارٹی نے پی ڈی ایم کی اسٹیئرنگ کمیٹی سے مستعفی ہونے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس حوالے سے ذرائع نے بتایا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما راجہ

پرویز اشرف، شیری رحمان اور قمر زمان کائرہ آج پی ڈی ایم کی اسٹیئرنگ کمیٹی سے استعفے دیں گے۔پاکستان پیپلز پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی نے مؤقف دیا کہ پی ڈی ایم سیاسی اتحاد ہے اور اس میں شامل کوئی جماعت کسی کے ماتحت نہیں لہٰذا شوکاز نوٹس دے کر دانستہ اپوزیشن اتحاد کو ناقابل تلافی نقصان پہنچانے کی کوشش

کی گئی ہے۔ پیپلزپارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ڈی ایم کو فعال رکھنا ہے تو پیپلزپارٹی اور اے این پی سے معافی مانگی جائے۔یاد رہے کہ پی ڈی ایم کی جانب سے عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) اورپاکستان پیپلزپارٹی کو شوکاز نوٹس بھیجے گئے تھے جس کے بعد اے این پی نے پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) سے علیحدگی

کا اعلان کیا تھا۔ اے این پی کے قائم مقام صدر امیر حیدر ہوتی کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کے نائب صدر کے عہدے سے استعفی دیتا ہوں، میاں افتخار بھی مزید پی ڈی ایم کے ترجمان نہیں ہوں گے۔دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو کی زیر صدارت پیپلزپارٹی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پی ڈی ایم کے

شوکاز نوٹس کا معاملہ زیر بحث آیا۔ بلاول نے شرکا کو شاہد خاقان عباسی کا شوکاز نوٹس پڑھ کر سنایا اور پھر اسے پھاڑ کر پھینک دیا۔شوکاز نوٹس پھاڑے جانے پر سی ای سی کے شرکا کی جانب سے تالیاں بجائی گئیں، بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ہم سیاست عزت کے لیے کرتے ہیں، عزت سے بڑھ کر کوئی چیز نہیں ہے۔