حکومت نے عاشقانِ رسولﷺ پر ظ. لم و تش. د. د کیا، علمائے اہل سنت

کراچی: صدر تنظیم المدارس اہلسنت اور ممتاز عالمِ دین مفتی منیب الرحمان نے لاہور واقعے کے خلاف آج پیر کو ملک گیر پہیہ جام اور شٹرڈاؤن ہڑتال کا اعلان کردیا۔ یہ اعلان انہوں ںے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر دیگر علمائے اہل سنت علامہ مظفرحسین شاہ، مفتی جان نعیمی، مولانا ریحان امجد نعمانی، مفتی

عابد مبارک، مفتی رفیق حسنی، علامہ اسماعیل ضیائی،علامہ لیاقت اظہری، صاحبزادہ عبدالمصطفیٰ ہزاروی، مفتی نذیر نعیمی، شاہ اویس نورانی، علامہ رضوان نقشبندی، مفتی الیاس رضوی، مفتی وسیم المدنی، علامہ عمران شامی، علامہ اشرف گورمانی، علامہ رفیع الرحمٰن نورانی، علامہ مرتضیٰ مہروی، علامہ ضیاء الرحمٰن صابری،

علامہ بلال سلیم قادری، شاہد غوری، زمان علی جعفری اور دیگر موجود تھے۔ لاہور واقعے کا ذکر کرتے ہوئے مفتی منیب نے کہا کہ حکومت نے عاشقانِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم پر ظ. ل. م. و. ت. ش. د. د کیا، ہمارا مطالبہ ہے کہ تمام گرف. ت. ار شدگان کو فوری طور پر ذاتی مچلکوں پر رہا کیا جائے، ان کے خلاف دائر کی جانے والی جعلی ایف آئی آر کو

فی الف. ور خت. م کیا جائے۔ انہوں نے آج پیر کو ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے ملک بھر کی تاجر برادری اور ٹرانسپورٹرز سے بھی تعاون کی درخواست کی۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہڑتال پرامن ہوگی اور عوام سے ناموسِ رسالت صلی اللہ علیہ

وسلم کے نام پر تعاون کی درخواست کی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پریس کانفرنس سے قبل حکومتی اہل کاروں نے مجھے کہا کہ امن و سلامتی کی بات کی جائے لیکن ہم حکومت سے کہیں گے کہ وہ طاقت کے نشے میں ظ. لم نہ کرے اور ہوش کے ناخن لے۔ مفتی منیب الرحمان نے اپیل کی کہ اس پرامن ہڑتال میں کسی کو بھی نقصان نہ ہنچایا جائے۔