’’ تمام اسپتالوں کے آئی سی یوز بھر گئے۔۔‘‘ کیا ملک میں لاک ڈاؤن لگنے جا رہا ہے؟ حکومت کا بڑا اعلان

’’ تمام اسپتالوں کے آئی سی یوز بھر گئے۔۔‘‘ کیا ملک میں لاک ڈاؤن لگنے جا رہا ہے؟ حکومت کا بڑا اعلان

کراچی ( نیوز ڈیسک ) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ پاکستان میں دستیاب آکسیجن 90 فیصد استعمال ہورہی ہے ، بھارت میں کیسز کی شرح 17 اور پاکستان میں 11 فیصد ہے ، ہمارے اپنے حالات بھی اطمینان بخش نہیں ، ایک ہفتے میں کورونا مریضوں میں کمی نہ آئی تو ملک میں مکمل لاک ڈاؤن ہوگا ۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت میں آکسیجن کی شدید قلت پیدا

ہوگئی ہے، بھارت میں کورونا کے باعث صورتحال خراب ہے ، مشکل وقت میں پاکستان کے عوام بھارت کے ساتھ ہیں لیکن ہمارے اپنے حالات بھی اطمینان بخش نہیں ہیں ، کیوں کہ پاکستان میں دستیاب آکسیجن 90 فیصد استعمال ہورہی ہے ، تمام شہروں میں آئی سی یوز مکمل طور پر بھر چکے ہیں ، کورونا سے مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔فواد چوہدری نے کہا کہ ہماری 79 فیصد آبادی ایس او پیز پر عملدرآمد نہیں کررہی ، شام کے

وقت کھانے پینے کے میلے ٹھیلے لگ جاتے ہیں ، ایس او پیز پر 21 فیصد عملدرآمد ہورہا ہے ، 77 فیصد کورونا اربن سینٹرز سے پھیل رہا ہے ، کراچی میں کورونا کیسز کم ہونے کی وجہ سے سپلائی لائن بحال ہے ، اس صورتحال میں اگر کراچی میں بے احتیاطی ہوئی تو پورے ملک پر اثرات ہوں گے ۔انہوں نے کہا کہ بڑے شہروں میں کرونا بہت بڑھ

چکا ہے ، لاہور میں 90 فیصد آئی سی یو بیڈز بھر چکے ہیں ، لوگ خریداری کیلئے ڈلیوری سروسز سے استفادہ کریں ، ڈلیوری کمپنیز کیلئے حکومت خصوصی مراعات کا اعلان کررہی ہے، جب کہ مریم نواز نے کراچی کا دورہ ملتوی کیا جو اچھی پیشرفت ہے۔الیکشن کمیشن کورونا صورتحال سامنے رکھ کر انتخابی مہم پر غور کرے اور الیکشن کمیشن

کو بھی کورونا کی صورتحال میں الیکشن ایس او پیز بنانے چاہیئں ایک سوال کے جواب میں وزیر اطلاعات نے کہا کہ صرف تین ملک بھارت ، چین اور روس ویکسین برآمد کررہے تھے ، اب امریکہ ویکسین برآمد کر ہی نہیں رہا ، ویکسین منگوانا مسئلہ نہیں اسے لگانا اور کولڈ چین بنانا ضروری ہوتا ہے۔