عمران خان کو چیلنج کرنے والے گورنر بلوچستان کا ایک اور حیران کن بیان

عمران خان کو چیلنج کرنے والے گورنر بلوچستان کا ایک اور حیران کن بیان

اسلام آباد ( ویب ڈیسک) گورنر بلوچستان امان اللہ خان یسین زئی نے ایک بڑے قومی اخبار میں6 مئی کو شائع ہونے والی ان سے منسوب اس خبر کی تردید کی ہے کہ انہوں نے اپنے عہدے سے مستعفی ہو نے سے انکار کر دیا ہے۔ وزیر اعظم کے بارے میں ان سے منسوب ریمارکس کے بارے میں ایک بیان میں انہوں نے اس خبر کو من گھڑت اور

بے بنیاد قرار دیا ہے۔ انہوں نے ا س جھوٹی خبر کی سختی سے تردید کرتے ہوئے نہ صرف شدید بر ہمی کا اظہار کیا ہےبلکہ مذکورہ اخبار کے خلاف ہر جانہ دائر کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ گورنر یسینٗ زئی نے اپنے وکلاء کو خصوصی ہدایت کی ہے کہ مذکورہ اخبار کے خلاف ایک ارب روپے کا ہرجانہ دائر کیا جا ئے۔ واضح رہے کہ گورنر بلوچستان کی تمام خبریں اور تصاویر سر کاری میڈیا کے ذ ریعے سے ہی شائع ہوتی ہیں۔ اس مشہور قومی اخبار

کی کوئٹہ کی من گھڑت اور جھوٹی خبر کے حوالے سے گورنر بلوچستان نے واضح کیا کہ انہوں نے نہ تو کسی سے بات کی ہے اور نہ ہی کسی ٹی وی چینل یا اخبار کو کوئی انٹر ویو دیا ہےاور جان بوجھ کر انتشار پھیلانے والے بیانات سےگورنر بلوچستان کا کوئی تعلق نہیں اور اس سلسلے میں کسی بھی حلقے میں اگر کوئی غلط فہمی ہے تو اسے فوری طور پر ختم ہوجا نا چاہئے۔ گورنر بلوچستان نے کہا کہ وہ وزیر اعظم عمران خان کی تہہ دل سے عزت کرتے ہیں اور ان کے بارے میں ایسا بیان دینے کا سوچ بھی نہیں سکتے ۔ مذکورہ خبر میرے خلاف بہت بڑی سازش ہے۔