crossorigin="anonymous">

’’عمران خان دوبارہ وزیر اعظم بن بھی گئے تو انکی ٹیم کا حصہ نہیں ہونگا۔۔۔‘‘‘ پرویز خٹک نے یہ بات کس کو کہی؟

اسلام آباد (نیوز ڈیسک )سینئر صحافی چوہدری غلام حسین نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام ’آف دی ریکارڈ‘ میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ پرویز خٹک پارلیمانی پارٹی اجلاس میں شرکت سے قبل بھی غصے میں تھے۔

پارلیمنٹ ہاؤس میں میری ان سے ملاقات ہوئی، اس وقت وہاں پر دیگر ایم این ایز بھی موجود تھے،وفاقی وزیر نے کہا کہ اگر ہمارا گیس کا مسئلہ حل نہ ہوا تو ہمیں کوئی ووٹ دے گا اور نہ میں کسی کو ووٹ دوں گا،صاف اعلان

کر رہا ہوں۔چوہدری غلام حسین نے مزید کہا کہ اس موقع پر کسی رکن اسمبلی نے حماد اظہر کا تذکرہ کیا تو پرویز خٹک نے سخت الفاظ بھی استعمال کیے البتہ انہوں نے وزیراعظم سے متعلق ایسی کوئی بات نہیں کہی۔

پرویز خٹک نے وفاقی وزراء پر بھی تنقید کی۔انہوں نے کہا کہ پارٹی تباہی کا شکار ہو گئی ہے،ان حالات میں ہم کے پی کے میں کوئی سیٹ نہیں جیت سکیں گے۔میں اس طرح الیکشن نہیں لڑوں گا اس کے باوجود اگر عمران خان وزیراعظم بن جاتے ہیں تو میں اس ٹیم کا حصہ نہیں ہوں گا۔مراد سعید اور حماد اظہر جیسے لوگوں نے

وزیراعظم کو جھوٹی کہانیاں سنا کر بربادی کی ہے۔چوہدری غلام حسین نے کہا کہ پرویز خٹک نے میرے اور اسد عمر کے سامنے یہ تمام باتیں کیں اور یقینا انہوں نے یہ باتیں اجلاس میں بھی کی ہوں گی۔۔خیال رہے کہ قومی اسمبلی کے اجلاس سے قبل وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پارلیمانی اجلاس میں وزیر دفاع پرویز خٹک نے وزیراعظم عمران خان سے اپنے تحفظات کا اظہار کیا تھا۔وزیر دفاع پرویز خٹک نے وزیر اعظم عمران خان سے کہا آپ نے غیر منتخب لوگوں کو آس پاس بٹھایا ہوا ہے، میں یہاں سے جا رہا ہوں، یہ کہہ کر پرویز خٹک نے

اجلاس کا بائیکاٹ کر دیا۔ اس موقع پر وزیر اعظم نے کہا میں ملک کی جنگ لڑ رہا ہوں، میرا کوئی ذاتی مفاد نہیں ہے، میرے کوئی کارخانے نہیں، میری کوششیں ملکی مفاد کی خاطر ہے۔ جب وزیر دفاع پرویز خٹک اجلاس سے اٹھ گئے، تو کچھ ہی دیر بعد پھر واپس آ گئے، ذرائع کے مطابق وفاقی وزیر مراد سعید پرویز خٹک کو واپس منا کر لائے۔پرویز خٹک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرے اور وزیراعظم سے متعلق بے بنیاد خبریں چلائی جارہی ہیں، وزیراعظم اور میرے متعلق جیو نے غلط رپورٹنگ کی، ٹی وی دیکھ کر حیران ہوگیا اتنا بڑا طوفان کھڑا کردیا۔ انہوں نے کہا کہ آپ لوگوں نے اتنا بڑا ہنگامہ برپا کردیا، میڈیا کو کہتا ہوں اس کو روکے، میں سگریٹ پینے باہر گیا تھا، ہمارے صوبے میں گیس کا مسئلہ ہے، میرا سوال تھا ہماری گیس کی اسکیمیں نہ روکی جائیں۔ پرویز خٹک ہماری اندرونی باتیں ہیں، پارٹی میں ہر طرح کی بات ہوتی ہے، ہم نے کوئی سخت بات نہیں کی، درخواست ہے اسکیمیں نہ روکی جائیں، میں وزیراعظم کے خلاف نہیں نہ ہوسکتا ہوں۔

Check Also

نئی لفٹ بھی لوگوں نے توڑ دی ۔۔ گرین لائن بس سروس چلنے کے کچھ دن بعد ہی اسٹیشن کی حالت بری ہوگئی

گرین لائن بس سروس جس کے شروع ہونے کیلئے کراچی والوں نے بہت زیادہ انتظار …

Leave a Reply

Your email address will not be published.