اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) شفاف انتخابات کے حصول کے طریقہ کار پر پی ڈی ایم تقسیم ہوگئی ہے۔ سینئیر صحافی نعیم اشرف بٹ نے بتایا کہ اپوزيشن اتحاد کی اکثريت اسٹیبلشمنٹ سے مذاکرات کے حق میں ہے جبکہ چند رہنما صرف آئین پرعمل درآمد کو کافی سمجھتے ہیں۔ اپوزیشن اتحاد نے شفاف انتخابات کو ملکی مسائل کا حل تو قرار دے دیا لیکن اس کے حصول کے طریقہ کار پر اتفاق نہیں ہوسکا ہے۔

نعیم اشرف بٹ کی رپورٹ میں کہا گیا کہ ذرائع کے مطابق پاکستان ڈیمو کریٹک الائنس کی اکثریت آئندہ انتخابات کو شفاف بنانے کے لیے تمام اداروں سے بات چیت کے حق میں ہے۔ ان میں مسلم لیگ ن اور چند چھوٹی جماعتوں کے رہنما شامل ہیں تاہم کچھ رہنماؤں کا کہنا ہے کہ اگر ہر ادارہ اپنی آئینی حدود میں رہے تو مذاکرات کی ضرورت نہیں ہے۔ اتحاد میں شامل بلوچ رہنما نے نجی ٹی وی چینل کو بتایا کہ چھوٹی جماعتیں یہ سمجھتی ہیں کہ 2 بڑی جماعتوں کے چند افراد پہلے ہی پس پردہ اسٹیبلشمنٹ سے رابطے میں ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں